چوں خواہیکەنامتبودررجہاں ٭ مکن نام نیک بزرگاں نہاں ہمیں‌کام ونازوطرب داشتد ٭ بااخربرفتندوبگزاشتند

(ہسری)

پیشواءاھل ‌سنةوجماعڈرئیس الہتکلہین ابومنصور مہںماتریدی زی ٣۳۳۳م‏ )

تالیف ابو اعم فلا م مین ماتر دی

٢٢ص]۱۹٣١‎

۵۱۰۱۱۰۲ 8۲113ل

1 3۲واد۲۲31‎ 5۹۷۵۲٥۰ ۸۲۱٥-٥١٥٢-۱۷٢١ 7ص0‎ 0٤١

6٣63٥٥٢ ۱۸۵۰۲6٥٥٥٥ (۸(ا)‎ 1

چھمل توق تر یں ان اب جذکروامام ابو نصور ماتریری ہالیف ابد عائعم خلا م مین مات دی زیراجنام قاری فلا م شی کپوزنک شر بد اللہ علیہ سعدی رشع بدالظا ع ری نظرعاںل علامشہباز ار( خیب وامام چامعۃالنور)

سن اشاعت ٣ھ‏ ہطالل ٦۲۰۱ء‏

لن کے نے مکتب: نشی پصطفی منزل ۸۰۵ب بلا کککشیرکالونی :ہم ءپاکستان درس ہہجو بیر ال رن وایٹ وی یریم یی و کان را میتی ار صطفی رکا نغمب ر۸ کاسسل سٹربیٹء برائرفیلڑء برطاعر

کر وامام ااومنصور ما تر یدب کی اجمالی فہرست

مان اہنامرضانۓ صف فی کراٹو لکاتتارف وتضرہ 7فآغاز اب اوگل :یح ترکستان(ماوراء اھ کی وو راسلام انل ترکتان ترکتتان می ںٹنپوراسلام ترکتتان میں عرب پا لکاورود ترکتان میں لف یں ترکستتا نکی خودتا رھک وتیں سامای دورعکومت یں جار ں لن فتباءا تا فک یکرت ححخرت(قضج بن عپانس )شی لھا کاعزار باب دوم : حیات امام ال سنت و جماعت انور مات یری امام ایور مات برک یک ولادت امام ایٹنصور مات یدب یکی پیدائل نام ونسب ولزیت والقابو ںک یکشزت

ضی

۲۳ ۲۴ ۲۵ ۲۵ ۲٤

۲۰۸

بی

ے۳٢‎

ا نورلنیت ے

القابوںک یکرت

امام اٹنصور مات یدک یکی اسا تج ہکرام

ابو راج من پا عیاضی( رح ایر )

تنا یوک را بن اسحاق می نی جوزحانی ماش رن ماگ رازک(رض اش

رین یگ یپئی (رعاش)

ابوعوسجاتو بەبن قتیبهالھیحمی النحوی الاعرابی(رحمهالل)

امام انور مات بورکی ( رح ال ) کے اسا ج2 وک رام کا روط پاب -وم:امامایٹنصور ماتز یبی کےیلم نل کے بیان میس امام اپوڈنصور مات یرب یکی ححضرت ظز علیہ العلام سے ما قات اندیا علیہ السلا مکی دعا قرب خداوندکیکاوسیلے

امام ااومنصور ماتر ری کان کی اورا نک یکر امت

امام ال ڈور مات بدبی بہت بڑے ہنا ظرجے

امام الڈنصورماتز ری ائیمغس ری شعن میں سے جے امام اایٹنصور مات بر یکا جائمح امعلوم تے

حیات امام الومنصمور مات یر یکا خلاصہ

امام انور ماتر یلرک کان وفات

عرارامام انور مات ری

امام الوڈنصور ماتر بر یککاوفات کے بح رخو اب میں متا

۲۵

۳

۲۸

۲۸

٢

٢۱

۳

۴ٴ'

۳ھ

۵۳

۴٦

۵۴۳

۲ھ

۲ھ

ھ٦‎

۵۸

٦٭‎

٦ا‎

٦ے‎

۳٣م‎

اڈاع نا زاس اواب د امش یکازریع

وشن بن سعیدالرسشخنقیکاخواب

امام الیٹنصور مات یہی کے دشر تکا شوہ

امام ااومنصور مات بارکی کے عد شہرت کے وجوہ

امام امنور مات بدبی کےےتلا یمر ہکرام

اتی ابوالقا عم اححاق من ھب نم بن اسا میلع مرتزی(۶اش) امام ابوائ نکی ین سعیر ”یق (رعءاش)

نا والاسماء ین الولیث بخاری( ری ایٹر)

امام ابیشری ہرانک ری من موی نکی بزدوی

ابو ام العیا(ر_اش)

اوسععمہ بن اواللیث پنارگی(ر2 ,ال )

ماما یٹنصور مات یدگی کے جمحص علاءومشا کرام

امام ااوٹنصور ماتز بربی کے بمحتصرخلفاۓے عاسیہ

باب ہام :تالیفات ولصزیفات

امام اایٹنصور مات بد یکی رف پتت کاو ںکا خلطاختساب سے تاو یلات التقرآن (تضی الم تریری)

تفبردتاویگ می سکیافرقی ہے

تی الما تر بد یکاانداز بیان

تفم امام ااونصور ماتربوریی سے بعد کےعلا رکا استفا دوکرنا شر او یلات القرآن

٦ے‎

19۹

َے

ق

ےے

ےے

۸ے

۸ے

۸+

۸۳

۸٦

۸۹

ے۹

اے

ے٣‎

۸ے

۹ے

۸۲

۹۵

تا لات ائل سن تکی اشاعت تاب الف خی تاب التوحی دک مضامی نکاتیم مکل کنا ئیں لام سے اعرائ او یم فقہمیس اتال کاب القالات بی فذرقوں کےبقا تد داعمال سے سی ےکی کیک یی سے دوراسلا ہی کے ایتگراگی فرتے تی فرٹقوں کے عقا کی مر فت ضردری ے امام ایوڈنصور مات بد یکی مل کے ردی سکتاہیں زیز ہیں ڈیر شکاڑژن اصول فقری سکتایں باب چم :امام ایٹنصور مات بدبی علا ومشا کی نظریںس امام رہائی اصریردالفخای(رعاش) ئن مکلا مک یکتابوں میں فلس او مض نکی امیززل حطر تج عبدلحفن ححرت دبادی ( رص ارٹش) 7 نشین مل رعبرالعز بن پرعاروی(۶۸ء۔اش) امام ت"راللد بن رازی(رع7اش) علامہٹوراللد نگل اقاری(ر_الش) علا مم ۔ سز مپ دالوا تگرائی(ری‌ائٹر)

لزا

"١۹

۲۳

۳

۲۳

۴

٢

۲۵

۲'۳

۸

علامہسش رم نیز ید علامہالوالوفاعرالقادرڈرشی

امام اترضاخان محرث دباوی (ر۶ءاش) علا مہ الال نات ع برا ینوی (ر ‏ اریٹ) علامیبداشم ین عب یلکن وبی

مو ناقری ھی (رح ارئر)

صاتبزادہطحی اق ارام غا نی اش) مولا نا سدراواشسن ندوی (ر ‏ ایٹش) ڈاکٹرخلام جیلا نی برق( رع7اش)

ڈاکٹمپری پاسلوم

اب و

امام الیٹنصور مات یدکی کے اکا راوزیل ملا مکی اساس

امام اٹنصور مات یدبی 2رح اش کی کلام ی سک ہیں

سے ےت

اوھ بن بما نم رقنری ( رح ارڈ ر) مل ۴۲۷۸ھ

رالاسلام انی بھی نین بن موی بز دو (رجم ایش) مت ۴۸۹ھ قاشی صدرالاسلامابوالیسرش بزدویی (رحمت اشعلیہ )مو ۵۳ھ

ماما وا کین میمون نھب نی (رص ال مو یی ۵۰۸ھ

تن ال مامالائل الا سدالوالشا عٹج ہن فرب لا ۶ ٰ٢۲و۔‏

اع

ے۲2

ے۲

۲۸

۲۹

۲۹

۲۹

۳١

۳۳

۳٣

۵ ۵ ۵ ے۴ ۲۸

الک

امام شم الد ین الوتفنص عمری نیج بن احسٹی مر قندی (رح اش متو نے 9۳ھ ۵۱ا

۸

۶۳۴

٦

علا مہ علاء ال بن اپونگرشم بن ام بن اللی اتمم رقنری الا ث۹ 2۳ھ نھ اف واللد گنو رالد بن ا بن بنا رگ صا بوٹی )رعاش )۵۸۰۴ھ امام ابو بدرانرالی شاب الد یٹپل القو رش ماش )اھ

امام حافظ الد بن دال مل ابوالہ کا تک بدارشبن اشھو فی رم اوڈدمتو قیِ* اسے ھ عا مات عبرالھز یہن امھ بفاری( رح ا)۴ گٰ٣بھ‏

عاا مال شکورش بن عبدالسعیر بن شحیبسا ھی رص اشک ی 7

امام صدرالش مبیعتخبی راڈ سو ول اش )يٰ2 ٣۶ھ‏

علامکمال الد بین مب ن بدا لواحدالمحروف اب نع مام(ر اللہ )۸۱۶۳ھ ہشقن علاسعدال دب یاھتا زان متوئی ۹۳ے

ریس ال ٹین علا مم رسیدش یی جرجان ۶۶ نٰ ۸۱۷۰ھ

علام۰کمال اللد بن ام البیاشی مال )۶۴۲ ٰ۹۸+اھ

امام ایمنصور مات یدبی سکنل وکا لکااعتراف

باب 2 امام اپٹنصور مات یدب یکی اخترال پپندی یدب کےاصول

عفڈا ئل کے باب شی مائر بلدگی رحب رسب اتید نی متولیت

شا عرداور مات یریک متولیت تخلیبادونو ںکوا شا عم ہج یکہاجا ا ے اشما عم رداور مار بر يک اختلاف

۳ھ

لا

ے۵ ۸

۸

٦

٦

اس

ست

۹

ى٣‏ ےا

اے٣‎

ےا

اے٦‎

۸'۳

رھ

ے

امام اایٹنصور مات باری اورامام اشعرکیکااختلا نی مسائ لکی تعداد صل کلام یلعا اش عرہکی خی مات

خاتحمی تاب

لے عرارامام انور ماتریری

اولیا ءال کےیتھورے پرکٹیں حوص٥‏ لکرنا

کیاقبروں کے پا اکنا جات ے؟

کیا قرو کا طواف اور اوسرد یناجائڑ ے؟

متملہاستحاعت پالغر مات الخ کے دو ری ندرا ء نما تا شک جواز

اَجِيْثُوْاتَ جِبَادالله ۷6م اغذدعران

مول فک خی مو کنب مول کیم لو کنب

۸۲۴

ے۸۸

ے۸

۹

۹۳

٦

ے۹

٣۷ك۳۰”٭‎

ك۲

۲۰۸

۲۰۸

۸۲۴

اہنامرضانۓ صف فی کجراپو کا تارف تصرہ تک رٗ امام انور مات بلدکی رت علیہ ذ کاب بھی علا ماوع اص غلام مین اتر یدگ ی تن خرقر بک یکاشاہکارہے۔آ پ نے پنیٹواے اعاسنت وجاعت ء ری مین ححضرت علا مہامام انور مات یی علیہالرح کاب جائ تک تح یکر کے تصرف ان سے اپ محب تکا بھ لپودانھمارفرمایاے بللہ مز کیل رحتقیتذ پش لکیاے۔ ہکا بآ ط اواب لپ کےعالا تد وا ات بک ال اسا ولا مہ تالیفات وتصضیفات عم مخ کے ہاں 1 پ کے مظام ومرجی ہآآپ کے سک اعتدا لک مقبولیت وعا لی ری تکوبڑی تفصبیل ے بیا نکرتی ہے۔ امام صاحب نے ابلسخت اورائل برحعت کے درمیان فر قکوروز رش نکعلر دا عکیا۔آپ نے درجنوں بذکقی فرقو ںکارد اوران کے اعتراضات کے جامع جوابات لک ےک راہلسفت پراحسا نشی رف مایا۔ آ پکی مت دشا نکو بیا ن۷ کے علا مہ فلا حم من مات بودکی نے اعاسذ تکو ایک ھی وی ورکرانق فی ںکاے۔ صفیات ۱۲۲۵ء قبت در یں تن کا پت :طرکورہ بلا

(رجب ا جب ۱۲۳۸ءاپ بل ے۲۰۱ء)

ا7ف1آغاز پِسمللِاْرَخمنِ الرٌجیم قا رج نکرام!علمالھدیٰ,,رئیس المتکلمین عمدۃالمفسرین, مصححعقائد المسلمین امام اھل السنةو الجماعة ابو منصور محمدبن محمد بن محمود الماتریدی السمرقنادی المحنفیل(رجم انتا لی )بڑ ےیل القدرءصاح بکرامتء امام ائل نت ہو ۓ ہیں ۔طنقات احنفی ہک یکنا وں کےککھ کا آ نا زآنھو ریس صہدرکی اج ربی سے ہواہے اوران شی صر فآ پکا تارف پیج لک یاککیاے۔۔ دترم رنٹین نبھ یآ پک کر نکی سکیاادر ڑکی بے انصائی ےکا م لیاے۔ چو خوائیکہنامت بودردجہاں ‏ با - من ا نیف :زگ ناں چندرسمالوں سےامامااڈشصور مت یدبی کے پارے میق یکا یں اورمقا لا تک جار سے پیں یکن زیادو تع بی تک مان یئ یش ہیں۔اوراردوی کوک ایی ابی جس میں امام ا ٹور مات بلدکی کے حالات اورک رنا مو لکا ذک رکا گیا ہداس سے ےپ کے عالات زندگی اورکارنا مو ںکا کرک نا ضردری ےرام اروف نے بڑ یعحنت اورلوشت شک اور متنعد ابو ںکی ورتیگردالی یتو مکی مرح ہا ہویش نیک رسا لامامابومنصور ماتریدی سمرقددی حنفی کے نام سےشا کیا تھا۔ راس کے بدددسری مرج امام اھل سنةوالجماعةابو منصورمحمدماتریدی کے نام ےتذ کرہائمەدین ٹل

شال لکیاٹھنیا نی سےا ک ےج نہ ھی اس لئ اب مز بی نکرنے سے جھ

۰ا

عالات نے ا نکوای کنئی ت تیب اورمتحدداضافوں اورتلیموں کے سا تج ہکا پی صورت میں تذکرہ ابو منصورماتریدی کے نام سے گی ںکیا جار پاہے۔ ا سکاب می امام امنور مات بلدکی کے احوال ومالمات ولصذیفات اورآپ کےاسا رام وا وت علا مین ات ید پیکاذکرکیاگیاے۔اور بت سے مان وفواداورفرائرجھی:ش کرد ہیں سی لمکا ناوشش کیک ےک فلطیاں نہوں ان پچ بی ملا خی ہک خاطیو ںاہو ن:ئمکن ہے۔اوررام الھرو فکوا پگ لی بے بضائقی کا ودالودا اھر اراوراضساس ہے کو یااسی مو ول کے مطا بی اما شرف الد بن ار نے فرمایاے : منج فصو رمع ٭+ نے چو نادان دائینی وفرلم شس اپ عکزوریی اورکوتا یکا اھر ارک رتا ہوں ء جاور یوقوف اور پٗخ لچ٢‏ سکی طر عنییں ہوں یل از یںگفتترانر انل ملف یو رین ضلّفٌ لَدِانََهدفَ اس سے پیک شندلوگوں نے عذہ بیا نکیا ےکشس نے تی کک یٹک دہنقانہی نگیا لیک ب نون رین تق یبزیا ردنیرن لن ا پقی طاقت کے مطاب نکوشت کر نہ بیکارادرخا شی رے ے یتر سے رائمالھروف کےہہایت ج یھت زم جناب الحاع رط یقتصونی نوج رٹقشندبی صاحب کے صاتزادے الو جوا نہ بازاجھ نے ا لکنا بک اشاعت می ں تو یناو نکیا ے_ ربکا نات یں ا یمان اود جا نکی سلام تی عطافمائے۔ اورا تھی رام اف رو کی اس اتا حم یکوشر فقو یت عطافغ ما اورسب محاونی نکواج شی عطاغرماۓ ۔اورالڈ رجا تہ تماٹی ہمارےولوں میس اپنے نیک ہندو لک محبت پبیداف ما اوراپنے نیک مقبول بندو ںکی ممیت سے ہر درف رمائۓے ۔آ مین

سر رما س ۹ 0 ہے سے یل نے ے۲0ے سی سر گے ہے یم بَا فا غفْزلَتَا و بَتَا و مَقْوعَنَا ساتِتَا وت وَفمَا مع الَبرار (حرہآلمران ۱۳)۔

اےہمارے رب ۔ بیو ں پش دے ہما ر ےکنا و او رما دےپعم سے جھا رکی برا تیاں اور (اپ ےکم سے ۳ موت دے ہیں ٹیک لوگوں کے سا تہ تَا از وَلوَالِنَي وَ لبون توق کون ا ساٹ (سورتایراتم۱٣)اے‏ ہعادرےرب۔ ہش دے یجے او رمیرے مال با پکواورسب مومنو ںکوشس دن صاب تقائم ہیاس صکی الله تَا یع حَبْر حَلقَد مل ول الہ وَآَتايِه آَنَحِيِی آمی دعا و لکاطالب: ابد ھا عم ملاع نین مات ری مصعنی نل ۸۵ بی بلاک شی رکالوئی لم ۔ پاکتان- حا ل ٹیم 8 ککا سمل سٹریٹ پرائ فی ءلنکا شائۂ۔ برطاعے- سام تاعیاء

اب اول : ترکستان(ماوراءالٹھر) گی ونہوراسلام ترکتان ایشیا کامشہورملک سے سے قدم ز مانے میں تو ران اورتا تا رکہاجا ما تھا۔ بافغانتاان کے شال میں دا سے ۔ مقر اور بفاراوخیر دا کے شمہورش ہیں ۔تو ران پیک ماوراءاشجر (در ماکے پار) کے ہیں۔ چوک ہن کستان اور مادراء اش ردد یا کون مودر یا کے یار ےء ایا لے ال عمرب نے اس علا کو ما وا ءاش رکہنا رو عکما(فیروزاللغا تی ۲۳۷٣‏ مشقی ووسارا علاقہ جودر یاءٹنیجون کے شال مشرق میں دا ے۔ بفیارا خوارزم اورتا شنقند راس علا ےے کے مشبورشہرہیں۔ ترکستا نکانامتوران ہے چنا خی صاحب اضوا بی مار تورا ن لیت ہیں : توران ای ترکستان وماوراءالۂہر اصل سکانہامن ذریةترك بن یافٹ,وکان ترك ولیی عھںوالںندوسمت الارضبآسمە تر کستان ولکن ٹی عھں سلطنةفریدون الی ظلتممس مائةعام ظھرتتسمیة ایران‌وتوراں

بدلامن ترکستان(٥۲)۔‏

ٹے ور تر کستزائنع اور ماورا شر ہے۔انس کے ای رئے وا لت کن نع پان ڈگ اولاد سے ڈیں۔اور رک اپ دالد پاش ثکاچا تین تھاءاوراہی کے نام سےا ز می نکانام ترکستان رکھگیا۔ اوران فرریدو نکی سلطنت میں جو پا سو بیس ریم یتال کا نام ترکستان کی بھجاے ابیرالن اورتو ران نام مش پور ہ گی تھا

قھائل ترکتان

(۱)اوز بک پ لوک ترک اورغاری ہو لے ہیںء(۴)ناجیکگ۔ ب لوک فاری ہو لے ہیںء (۳)قیدغیز پلک تکوں سے ہیں اود پہاڑوں شش رت ہیں مو اتی جچراتے ہیں ندم رگاس سائیںا ضھللارے ی۔

(۴)قزاق بیلیک تک اوتئ ہیں اور چہاں ای اورگھاس ہدد ہا لہ رجات ہیں بیاصسحاب مواشھی اورکھوڑے تچ رات ٹیں (اضوا گی جار تو ران ترکستان یل ےا )نز رکتتان کے دو ے ہیں ایک مغ ترکتتان دوس امش کی ترکتتان اورمضری ترکتتان میس بخارا ہس رقنراورحاشقنر وفی روش ہیں( موجوددوسط ایشیا ما شقن یمرن بنارااوزی؟کستان میل ہیں رکستان میں زیادہ ترت کت یی ؟ بای ۔اور یترک من یافث بن فو سہاالسلا مکی اولا دے ہیں ۔ چنا نچ عاشی شر عق ئدییش ےکہ یق م شی شال کے ز نی حص ہی ںآ باد ہے .نرک یافت بن و علیرالسلا مک با تھا درا کی اولا وو رک سے ہیں ۔اسلا قبو لک نے سے پپیلے ہیلک ملمانوں کےکفار ےبھی ز یاد ون تھے (شٹس جا رن اسم راسلام لا نے کے بد بجی لو وا گی الام ین گئے۔

ترکستان میں ہوا سلام

م۳

الا مکی تیج ری ٣(‏ ٣ی‏ ) بطا بی ساتو میں صدری عیسو یکوخرتجمرفاروقی رشی الڈ نہ کے کب دخلافت میں فاتحینعرب کے سا تھا یآ زر بایان یس داضل بموگیاتھاء اور خر تبکی نپ برایڈرشھی ال رعن ہا ل فو نع کے سپپ رمالا رر تھے ۔۰حخرت عتان رشھی ارعش کے دورخلافت میں مسلمالن اور گے بڑ گے اورواضتتان اورمخر بی ترکتتان بیس داشل ہو گے _ چلرتضرت امب رمتاو شی ای رعنہ کے دورشیل ۵ہ وکوطبیدالی بن ز یادکی مرک ردگی ٹیل

ر رکتتان رن ہواتھا۔ ۵ی یل عبیر الکن ز یادکی یگ تحخرتعنالن گنی شی الع کے سز ےار شی اع کی خٹ لاوش نے بنا رای اد کے رظ کر یمان سے پاش نان ےکی کی اع تابلاط (رہہے)زات مرک اگیا۔ اس ططر حآہتہآہتترکستان بی اسلام پگیلن ےلگا لگ راسلا مکی تی یل قد یکا آنناز ولیی نعبدا لک کےعبدرخلافت بیس ہواکیہ ٦‏ دکوقتیہ بن سل مکی سرک ردگی میں حرقہ ہخارا‌خوارزم+تا شقن ہو گے تھے اور ١م‏ سکاشف یھی رن ہوکیا تھا غ ری دس سال کےحرصیش پودامف بی ترکستان کی تھا۔

کان ں۶ بت لکاورود

ترکتتان کے علاقوں اورشروں می ہو راسلام کے سا تج بی عرب قبائل دفاتی نکیا دخو لبھی شرو ہوگیاتھا جم سک وجہ لف علاقوں اورشہروں میں عر بآبادہو گے تہ بچھروہاں کے ہاشنرے اسلام ٹیل دال ہو نے کے ساق ہی عم روں کے رک میں ر گے ےاود ری زان اع بت یب ا نکات یب ب نک اگی۔ یہا ںک ککدہاں کے اکش رش رفاء ینوی کرت ہی ںکرد وع پل ہی ں کان کے اہیداؤسلم بن عبداللنک کے اتآ ۓ تے اور یہاں ہی کے ہوکررہ گے تھے( منص ازروں می مسلرا ن قوش

بجی دج ےکہماوراء ام کیشپروں میں بڑے بڑ ےشن ہمفس رین مین ہمنو رین اور

۳ مقولی اورٹنقو لی علاء پیدراہہوۓ جوع لی زبان ٹیس بدشو لی رکتتے تھے اودرائی خطہ سےکاٹی ترادییش صوفیاءاورعلا بنروستان میس چلے گے تھے اورینفس علا رر بات جموں شی رکے نل شہروں بیس ج اکر اسلا مکی خدصتکرتے ر ہے۔ت رکمتتان (ماوراء اھ کے بلادشش بی صد یج رک یکواسلا کا پک ماہرانے لگا تھا۔ اور ہا لک بت پرست بردمت رحب اور نظ یق یش اسلام میس داشل ہونےگگیجیں امیر یا شمراسلام کےمرکزین گے تے۔ فسوی سهرقنراور بفاراد نیا اسسلام کے نکی رکز تھے مورین کھت ہی ںکنزکتان اس دوریی د نی علوم کےحاظط سے ری کججاز وعراق م نکیا تھا( روس میں لم نتو یں ترکتان میں نف یں ترکتاان پرعرب ۵ے ا(1 تاا لزا ھتران رہے ہیں س۔سامای خاندان کے

رالارھے ھ سز کک (ابیک سویٹیس بیس ) علومص تک ءآخرا نکاا قد ارنگی ۸ ۳ف یں شخ ہیا ءکیونکہ پمیشہ بادشاجی ربکا کات کے لے سزوار سے اورودی مو کا ماک ہے۔ اب اس کے بح چو خیو ںک یفص تکا تا ر٣‏ ۱۳ بر سعکومت کر نے کے بعد ۵۴۸ بیل ستارہ بھی ڈو بگیا۔ پچ رخھارزیی بادشاہوں کے ہاتھ میس اق ا رآمگیااورد٥۸۹‏ برک (۲۸ھھ بطا لق ا سااء سے ال ھ بمطا اق ڈ ایا ء )کک علومستکر تے رہ( رو میں مسلران قو می فص )اس پا سوسا لکی مدت می شی الشان اسلائیکارنا ےس راضجام دتے تھے۔لاتعدادمداریل ومسماجد تار کی اورعلا رکش رتعداویش اتی زبان پنیم ا یکم ول سے اشاععت اسلام یل مروف ر نے ےمگراس کے سات ہآ یں ٹیل فروگی مرائل بیس اختلافمناظر سے پیا اوھ ےکی بے رب

کر ا تا

۵

علاء ال بن خوارزم کے دو ریس( سا تو یں صدک یگ کیا ے ال )سب سے بڑافتنہاٹھا ّ۲ سکی وج ےت کان کےد ینیم اک زتباددبر باد و گے ۔ ا سکوف نیٹ یکہاجا تا ے۔ اس

نخان نے علاء وح تی نکوشمیدکرد یا ہتمام مدارس ڈسحید بی سک رااورجلاد یی ۔کنب خانے تباہکردۓ گے اوراسلام کےآ اروا نکئن مکرد ایا ماوراء اٹہ رکے بلاد یپ قضکر نے کے بعد چگیٹزی ختنرسارے وس ا الییامی می لکیا تھا ۔آ خرکا چک ینزخان ۴ ٢‏ لس شی ھ رکیا اورئلرماوذیالججہ اس کے لوت پلاکومان نے سم با ا کے مائیش وز یر بے یراہ نمی افش کی سان لک بناءپربقداد یو کش کی ادردادالاسلا مکی بر ہدیا ککماہیں در ا جلہٹش بہادریں اورعلا و کرد ۓ گے ۔ بقدادجھاسلامکا رکز او رگہواراوتھا

ا ںکوتبادد بادکرد یا ائل ز مانرشیں سای اختلاف شْد ید ہو نے کےساتھساتھ ذڑشی

انتا فبھی بےعد تے۔تمام سی علا ءآ ہیں میس اختلانی مسائل پرلڑتے تے شیع کی اتا فگھی شد ید تےں جن نب راللد من عدی اس وقت بلاکوخا نکاقائل اع شی رتھا۔

ترکستا نکی اہی پیم زیر بفدادکی بر بادکی سے اسلا مکوا قد رختصان پا اکا بکک ا کی جلائی یں ہ وی ماوراءاشہ رکےشروں میس ریگ یزیت ماری ا ہنس ہو گے جھے۔ ۵ز کو تم ور علومت قائم ہوٹی اور ے۰ ۸ھ باے ۸۵ کو تم ورفوت ہوگیااس کے بے اور رت حختعلورت تک نے کے لے جھکڑے.آ خرتکتتان سے تیوریی خاندا نکی عکومت ۵٦.‏ کےز مان می پت ہو یکیوکہ ہمیشہ بادشای انتا لی ھی کے لے ہے جو اتی ے۔

ترکتتا نکی خودمتا رتکوہیں

)١(‏ دوات صفار ہے( ۴) دوات عو بطہرستان میں ( ۳) دوات طولونمصرمیل ( ٣‏ ) دولت ساماشیا یران میس (۵) آ ل جران (٦)دولتز‏ ار ى(ے)اوردوات احشر رن کاتفضیل

۲ سے بیا نکر ن ےکا مو ٹنیس سے مگراس جنگ اقہ ار سےمعلوم پوت ےکسا لحاط سے یہ دورزہایت اف راف کی اوراب رک یکا تھا اور رع زکوروسا ت خودمتا رحا وی خلفغاء بیع با سک یکم رای وخلا فیلیر وک ری تیساوران ےن مو ں کا خط یی پڑھا اکر خیںبان سی غلیفہ کےگم ٤8۲و‏ یں خرخلافتعماسیک جوعہدزدال ۸ ۴ع ماش و ہواتھادہ ا1 اوک غلافتعپاسی کے سات جیامتم ہوگیا۔ ا ںآ خریی دورز وال مل متجردوا شحات جن یآ الع جس سے ایک بڑااندو ناک وا تع قیفر امطلی کا ماج وک اعمتمسلمہ کے لے ایک بہت بڑ یی ز7 یےف۷۸ رسفا ل7ک رز ئن قالے ا کرے ال اسسلا مکوزنجات دگی-

امام ذو رع زمر

دورغلافت کےز وال کے بعد ترکتتان یس جوب ی1ز اوعلومت قائم ہوٹی ووسامانی خماندا نکی لو کی (جواسدبنسا ما نکی اولا د سے تھے یہماوداء ارم اسان اودای ران پر عکومت کر نے گے .اس وفت ال نکا دارا ناش بنارا تھا۔ساماشول نے ۴۹۱ مھ سے نےکر ر۵ یبا تک ییفی ۰ا سا لج کعلومص تکی ۔ ا ںعرصٹیس ان کے ذ سکم رانوں نے بادشاجی کیا اوران بیس سےٹنخ کے نام م ہیں :

(١)نصراول )٣(‏ نصردوم (۳)اممکوفر خاش پرمقررکیا(۴) اساشُ لکوعرات پ رمق ررکیا(۵) نو ںکؤعرقہیرمقررکیا:اول (٦)۔ک‏ یکوطاشش قن رمق کیا

اسیو اول بادشاہ کے ماشریس امام صاحب(رجم اش کاوصال ہداتھا۔آ پ نے الب اے میں ککسامالی راو ںکیادوردیکھا ورای می رکا طو یل حصیگز ارد یا۔سا می عہرمی رعلم واد بکی و لکھو لکرص ریت یک یجان اس دوریس بڑی تحصوصییت فاری ز با نک تق ے کر ب کک ملا ن٘ س قد رکناہی ںککھتے تے ددع بیز بان می تھی جولوکععرب میں

ےا

ے جیے ا یرانی اور ترک د یھی ع بی ہی می سکنابیںککھتے پڑت تےسامائی بادشاہوں نے نار یکیفردغ دیا۔سا ماٹی دورٹ چود پنی دستور و رو نک ایا تھا اس کے تر ان طف فاری کی کک ہیں تروین دنتورد فی درز مان سامانیاں بز بالن پاےع لی وفاری نام او القاس مھ رق ری مرگ ردراین داحتا “پھر او اس الومنصورما تر بد یک مدان عحمدہمزھب حتعلیہ معز ل وق امطابالن لاد( زکتان :اتا ص۵۲۰۸)-

کی مامانیوںل کے ماشریس جواسلا می دستوراورقا ون رون اور تیارکیامگیانتھااس کے تار

کر نے والوں یں اپوالقاس مسرقنذر یکا نا بھی امام اب نمور مات باری کے سما تقد اس میس کور ہے اورامام ااوٹنصور ما تر برکی مت لہ اورقرامطوں کےخلاف خر ب نکی مرافع تفر ماتے ھے۔

ا اجما لکی پیل یں ےک ریوصت ساعی ۱ ۷۴ء یس ماوراءانب یں قائم ہوئی۔اپنے مورت ایی اد جن سا مان کے نام پرخا نلدان سامالٰیکہلا نا ہے ۔ٹھ بن ا تم بن ادسامانیول 01 الوم ت کاپ ہلا ران ے۔ ماوراء اہر کے علاددموجودہاففانتتان اورشراسانگگی اس عکومت میں شائل تے_ ا سکادارلحکومت بخاراتھا۔سامانیوں نے ۳۰۹۵م مک مکل ۳ سال علومس تکیا۔ ال ںحعرصہ شی الن کے و لحم ران ہھوئے ۔الن یل سب سے شچوراور اپچھا ران اس اشیل سامای ےب تا ۹۵ھ تھا۔اسماشیل بڑ ایک مزا اور عادل بادشاہ تھا۔

نصردو کا حیلم داد بکی ریت کی دج ےمتاز ہے۔اوراال کل اوخ او لکویاتیاز عائص٥ل ‏ ےکہاکی نے بخاراشیل ایک یم الشا نکنب خانہقائ مکی تھا٘س میس ہکم نکی کناپوں کے لے ییکاعد کاو مک رےخصض کے تے۔

اورسا مال بادشا ہوں نے اب فاری ز با نکی صرپریقیشرو عغکرد کی ول و وخودفاری ہو لے

۸

تے۔ چناغجفار یکا پہلا ہڈا شاع ررودکی ءاسا٘یل کے پو تے تھ رباشا کے(ا٭* س جو تاا ۳ھ ) کےدد بارکاشاع تھا۔ ایز مانریی طبر یکیمشبورتا رن اننب رکا فا ری ٹیل تر جب یاگیا- مشپونسفی فا رالی اوران سینا کابھی ابد ا٥ق‏ ساماٹی در بارس ے تھا علماء شی لم مکلام کے ماہر ام سور مات ری متوثی “یا ادرصوفیوں بیس الونصر یراج متونی ڈ ےجا ھ وڈ ڈ می ای دورےیجعت رھت ہیں۔ا نکیاکھی ہوئ یناب ال ع رب یش سے اویل سو کی

بنیاد یکتاوں میں شا رکی حالی سے (مات اسلا می ختقرتا رص ۲۴۳ ۴٣۲)۔‏

مض عثای صاح ب لیت ہی ںکہ مادراء انم رپ لفظ ےس کے عفن دد یا ء کے اس پا اکے ہیں ء اہر سے مراددر یا ءآ مو ےچ س کا ریم نا کون تھا۔ برافغانتاا نکورو ںکی تھیائی ہوئی مسر یاستوں سے ال ککرتا ہے۔ در یا کےجنوب میں اففانستان اورشمال تر اور ہنارا اور قنرکا علق ہے۔ ریعلا قہتارںاسلا مکی عہدسا یو لاوش ن تھا یہاں ےیل القرر مرن و ضر بن :نا ءءمیچ مین ناپ روزگا مین مان زس سا حنمدان درا واورشہور ال ران سای رہنمافو گی جن اور با کت اولیاء انل پیداہوے ۔علماءماوراء اتکی ھی تق یکا وشوں ےاساامی علوم نون کےذ خائرآ بھی گار ہیں ۔حدبیث اورفقباء سے مشمبوراما مت رحخر تکپر این مپا رک اورقر آ نےکر کے بعد بن اسلا مکی تین کاب جج بفارکی کےمولف امام ہار لارحم اد )ادراحاد بی کی صا سن یش سےمشہور کاب جائ تر مزی کے مول فکا لسن می سرز مین یمام کش پور مام ام نصور

ات یدب تیےار الم شض لکاؤ نکی بی علاقہ( رق )تا-

اون رفارالی رم الشرعلیہ )اورابن سنا( رت الشرعلیہ )یھ نما ء اور خواجہ بہاءالد بن شناد یے اولیاءاڈنجی ای صرز ۳ن یش پردان چچڑ سے تھے بیہاں مسلماوں کے وور خلا ط مم بھی ردیپییمٹوں کےتض سے یلوگ شبراورقصب دہٹی درسگاد سے خالی نھا۔

٢۹

ارول مدارش موجود تصرف بخارای سآ ٹس ودارس تھے جن می تقر یپا لیٹس ہنرارطلمہر دالیم مفت حاصس لکررہے تھے می وج ےکہاسلامکوعٹادی ےکی ہکن رد یکیششل کے پاوجوددہال ا بھی صصورتھال می ےک لو میک نآ جج ال کی بہوائوںل میس ہے۔رنک تمازآ کچھ اس کےنواوں یں ہے(سوبیت او نی نکی سلھمر یا او رجھادافغانتان )- ژگوارویارں نع

اوراء انہر سے مرادہ ارہ رقنرضسف ءاسیاب ء ند ہا شقندءاوشید بخوارزم کاشفر کے شمرہیں۔ ماودداء اٹھکا کر یک حدبیث می کچھ آ یاے( محگوۃ نشیف علاما تق مریناصل ۴۔ اور بااشہماوراء اش( رکتتان )یس بے شاراورلاتحدرادفقہاءاحناف پیدرا ہے ڈیں- ان یش ےئش کے اسماعگمرا ھی می ہیں :

امیبرالی رین امام او برانیڈشر بن اس مل بناریء ولا دت ۹۲ہ وفا د۹ل جاحہنص ری نر ار زی :مو نی دو ےا ح ہام مسلم من الحھاج ال کی الغیسا بوریی ہمتو فی ازم دہ الوداد انی متونی ۵ یح امام انی بن سورۃاکتر زی متو نی ۹ے ۰ء اما مب نک یجلیم

تر ری متو نی یبا امام ا اوک تال الا شی طا شقنری مت می ۵ی ہملک القلساء الو رین مسحودا لک سای متو نی ے ال شس الد ین ئ تی متو نی ۵۹۳ب الد ین رقاضیغان اوزجنادی متو لی ۸ یح راج الد بن ایی صاحب برع الا ا لی نی ۹اش < تا لاسلام ران الد نی مر خینا لی متوٹی 2۹۳ح علا ‏ یھو دزٹش ری متو نی دس اث ح ہبدالقا ھ رای مت لا اح علام می سید شرف جرعالی مت نی ارت علامہسعدالد بن آختاز ال مو ۲ علامصدرالٹر یور یبیدایشرین سحودمتو نی "یح تن سد یدالدی نکاشخری متونی ۵ے ےت علا ریو دکاشخریی مت فیا جح ابو الب رکا تع بداٹاسٹی متو نی ا ءافش شج بن شج فارا لی متو نیپس یتح الہش دنا ہار امت کی ٣ء‏ ابوز راصر یی مت نی ٣‏ ٣سح‏ ءالوعبد

٢۲۰١

اٹ شھ ربنم وی خوار زی م تی ٣ھ‏ رج ال اوران کے علا وہ بپےیشارعلا ء ہو ۓ ہیں ج نکیفصیل اقم فی ذکرعلا ہر قن میں ے۔ اس لئاس خط ارت لکو چیا ند(ستاروں )کی زین سکینے میس برک مالفیس ہوگا۔ چنا خر ایک عر شا عرنے ترکنتان ک تح کا ے_

عُلَمَاء الَإسشلاو کانُوبُنَوْرَا وَسَمَاغ الو نات ان رخ الأَْتْيائزف الْمَعْنَْْنا قَناَقِيْمَثتَلِمَزچچًا الَأَزکَانْ

ؤآ رذگ الع الیک تل لہ وَموَلِليزوَلهَى نان

ون الَمْملِينَذُنَاوَدِيًْ َتكَعَِيَبِفَضْلِقَا الََزْمَانْ کر و ان آ سان تھا۔ اگرتودیا کیخوا پش یکر ا تھے پان × ری شرف نظ [:۔اس کےۓکل کے لے شی سو نکر ے کے گے تھے_او راگ رود من حی کی تھن کرت اتد ھی جھے یہاں ملا ت رکستاان کی اور بآ یت کا عنوالن و پید سے۔ت سان مسلما فو لکاد بی ود نوک اشن تھا۔ز مانے وانے ا سکی برتر کی کاگیتکگاتے ر سے تھے( رو میں مسلما نتومیں علما ,کرام کے علاووضصوفیا رک را چھی وہاں بکثرت ہو ہیں چنا خی ڈاکٹرنسن امو وین ہیں وقں‌دخل الصوفیةمیدان دعوقا ی الاسلام ٹیبلادالترکستانئثی عھں السامآنیین‌تغلغل نفوذھم بین الاتراك الفربیین‌اولاثم اسظقوا الی الا تراب الشر قبین (اسلام فی اسالنٹ یش ٤ے۱)۔صاح‏ ب مم رنہ بفا یک باز یافت نت ہی ںک یت رکستان (اورماورا اہر کےعلاء ٥لا‏ کاعھی ود بنی نیش سمارے الم انسلا کو پہونیا۔حد بیث اش لیف می مام ارگ اوراما تر کی امام نسائگی جیے اویشن ام عد یٹ پیدا ہوۓ _فقہاورفکسفہی بھی اس علا کو تیازحاصل ہوا فک یی ماب ا سویڈ سےمصنف

۲

امام ریا ادرایک دوسرے بڑےمصنف فخر الدین بن منصور صاحب فتاویٰ قاضی خانءهلُ“ہور امام و فقیه امام مر غینانی صاحب ھدایاہ الع ےعااووعلاء الدین محمد بن احمدسمر قندی صاحب تحفةالفقھاء اور امام ابو بکر محمدبن اسماعیل بن قفال الشاشی صاحب اصول الشاشی ای علاقہ کے تے_شہورامام طپرفل لاب ساصاحب کاب التفاء فی الطب ۷خ اہ تضرفارابی از مکلام کے امام ابو منصورماتریدی ای علا کے تھے تصوف وڑ کی کے تیم تین شیوخ خواجہە‌بھاءالدین نقشبندہ اور حو اجہعبیداللہاحراء ای عاقہ کے تے۔ ای رر امام ابو بک ر کاسانی صاحب بدائع الصنائعءامام ابو الب رکات عبداللەنسفی صاحبتفسیر مدارک التنزیل ءعلامەعبدالرحمانتمیمی دارمی سمرقندی صاحپ مسنددار می ای علاقہ کے تے۔اورای علا تہ ہے مل جنوپی خلرمیں اسماعیل بن حمادجوہھری جوکراخت ‏ کی جفیاد کاب ااصحاج کے مصنف ہیں اور بلنلد پا یمحر دامام ہب فقہامام اتب نل او رٹیم عالم وب زرل حضر ت عبدالله بن مبا رک حضرت فضیل بن عیاض, مشھو رعالمفقہاسحاق بن راھویه'روٴڑے تے جواوزبستان سے جنوب میں علا قہت رکم انتان مل وا ے۔اور کاب کے خوارزی خ لے فی کے شی مصنف علا مہ بخقری صاح بین رکشاف او رنیم ادیپ ابو بکر خحوارزمیء بلاخت وادب کے شہورمصفعلامە یو سف سکا کی صاحب مفتاح العلوماورعلامەسعدالدین التفتازانی صاحپ مختصر المعانی‌اورہورٹٹر ندال ابوریحانالبیرونی غا طور پرقائل ذک ہیں ۔ بد و رات ہیں مج نک یکتا یں اسلائی علوم وفنو نکی ا بات اککتب ہیں اوراسلائی مدارس وجامعات کے نصاب میں ا بتک دانل ہیں اورعلوم اسلا مکی د امش سکع را لوت بھی ہہوگی یں (سرقدہبفار لک باز یقت ۳۴)-

۶)

.1 انا فکی اکر ک

رولف مکاح کک کے علاء تے۔اورفتما را تنا بھی بکشزت تھے نکیا وج سے احکام شرع جادی گے اود ماوراء ار( کان )یز یادوففنتنی کے پیر دکار تھے ۔کیوکلہ رت امام ابوڈ شی الیل عنہ کے شا ہیں ررض ٢‏ لات جج لف بلا و ےتصمولعلم کے لئ اتے ‏ ے اوردودٹیا کنل شبروں می سکیل گے ۔ اور چان کرت ر ہے۔د میا اکوکی ملک اورکوکی شب رای انیس تاس بیس امام صاحب(رحمہ ال کے شاگردرشیرضہہوں۔ ای طرں مشرقی علاقہ کےشخنلف شہروں میس امام صاحب کے لاہ تھے نکی وج ےیک فی یکوع روح حاصل پوامظلاسرقنہ بخاراءء ہرات ہر ہ کر مائع ‏ مرو ءنماءء رے ھا وندہ ران ء است رآ اد علو ان ء اصفھان ت جا ن طرستتا نع ء صشانیان تر مز ٹھتا نءگتا ان :خوارزم وفبرہ۔شہروں می امام صاحب( رح اش کے لاتعداوشاگرو تھے جنہوں نے ف یکوف روغ دیااو رص درازکک پیا وعظا مکاسلسلہجاری رباادر بڑے بڑےفتھاءکرام پیدا ہوئے۔ چنا غیرصاحب برا لککھت ہیں وَلَقَأَفبلاد مَاوَراءِ الَنِ اذ عِطائ لائْخط ی عَنَتَهُم عَلیمَلْمَپ الْاِمَایِ الاعَظیر آل عَیيِقَةٌوَمُفعَنَاءهُم فِالكَلا هو الام عَلَم الَهَ یابؤمَنُور ایی وَمَائریِڈمن قری مَمَزقَن وَهُم يْممُوْنَالْمَاثِيينَةُرں ص۲۴۲)۔ادرماوراء ال در کےشروں یس بڑے بڑےامام پبیداہھوئے ہیں نکاشمار نی سکیا جاسکتااورددوسب امام پئنشحم ال وحطیفہ( رح ا کے برصب پر تھے او زی مکلام دعقا نکد می ان سب کے اما م لم الع کی ااوڈنصور مات یدکی (رحم راید تے۔اورہا تریارعرقر گۓگلوں شس سے ابی لے اوران سب کلام کو مات بل کت ہیں( کیونگ و وکام دعتا یں امام امنور مات یدب کےتاںع تھے ).ھ اسان اور ادص اوراء اھر میں تشحل میس لے جے

۲۳

نویس عبہدسامالی می نکی رحب نے ز یاددقہ تی یھی ان بلادیٹش نر بی امام الومنصور مات یر اوران کے شا اآروول 1 وجرےروروارازک ھجب نے گیا تھا۔امام ال نمور مات یدگی کے بڑے بڑمے علا اورملگر بن پیرورکارتے۔ امام ابوعذیضہ کے بحعدامام الوم نصور ات یدک مس اود باٹی مپاٹٰی تے اوراس کے اطراف کےشہروں میس (مترم الو نصور

ات ید )غرضیکہوسط ایفائیش مض ترکتان ا سلائ یتہذ یب وشقد نشی مرکزرپاے۔ انیس یں سد مییسوبی کے خ رمک مف بی زکتتان پرر دی ا ںہ گن مے او کا نکی وعد لپ کر کے پاچ اشت رای پور چو ں کا نام دیا۔

(۱)قازقتتان (۲)او زجکستان دارا نا فی اشقد ( ٣‏ )کرخمزستان )٣(‏ تماتان دارا اذ حشقآباد(۵) ما یستان۔(اوزجستان می رہ بفارااوراشتترے )-

جخرت قدم می نع اس ری الع نہک ھزار

کھرقذراوزیکستان کےشہروں میں سے ہہت بڑ اشہرہے اور ہی درا فا فرد پاے اس میں بڑے بڑہےےعاماءوصوفا ہو ۓ ہیں جک نکؤیم نرک نسبت سے یا وکیا جا ا سے ۔حضرت قشم ین اس مین ۶بد الطلب رٹ اشنا کا ھارشرلیفبھی بیہاں بی ے جوا نپا کی مش پور دمح روف اورمرج خدالقی ے حر ت قغم شی اللعن نی سیر کے پیا زاد بعائی تےکر حضرت عحاس زشی ال رعنہ یٹ تے او دجن عیاس رش اڈ عنہ کے بعا ہی اورپ ١رت‏ ام ال بتما رثدشی ال کنیا کےیمکم طبر سے پپیراہہوئے تے ایک مہ ححخر تکبدالند نت فراورحخرت ق می انڈکتہمادوخو ںیل ر ہے تو نی سی دہاں ےکر ےت ہارب نجتفرررشی الڈرع کو ایی ےآ کے اور قشم رشی الڈرع کو اپنے سوا رکیا_ اوردونول کیل دعافر مکی ۔حخرت قغم شی اتی عنرسب ےآ خ نی صلی سے الک ہو ئۓے تھے لت لیر مارک می می صلی مکوا مار نے کے بعد سب سے خ می بی خش ل نصبیب

7

اہر کے تے۔اورضرت قشم رشی ا عنہ ےپ لی م کا آخرکی د یدارک تھا حضرت لی شی اللعنرنے اپنے دورغلافت ٹیل ا نکو حا مککہ ہناد یا تھا ححضرت بی رشی الڈرع کی

شہاد تکک ای چچلہماموررے پچ تر ت قض شی الیل عنہسعیدین عثا نشی نشی ارعش کے

ات گہما کی نر گئ اورپ دہال دی راۓ خدائ لتحمید ہو گے او یمر ری می ںآ پکو نکیاگیا۔اورآ پک مرا رمرقع خلالقی ہے۔

یس خی کلوگوں ےعحبت رکتا بہوں عا اکلہ ٹیل ان یل ےکڑل بھوں شاپ کہ اڈدنٹنالی چوک صلاججت عطاءفرماۓ ( نیک بنادے اورالنع کے زمرہ بیس شا لک نے )

باب دوم :جات امام ابل سنت و ججماعت انور ماتر بارکی ( رم اللہ )

امام ایور ماتر یر کی ولادت

امام اایٹنصور مات برک یھر کے مات ید( گا ہوں یس پبیرا ہو ۔ائی ل ےآ پکوامام ال مور مت یر یکہاجااے۔ والہاتریدی نسبة ا ی القریة التی ولں,ہاوتسبی ماتریں‌اوماتریت‌وماتریںاوماتریت قریةمن قری سمرقندئ بلادو ماوراءالۂہر ویرادبەماوراء)جیخون‌واحیاناتضافەمرقنںفیقال الشیخ الامام علم الھںی ابو منصور محمد بن ہد بن مود

الباترید بی السٹرقشدی ( قد ناب اتوحییلا)۔ اود مات یدک ال ںگاو ںکی طرف بت ےچس می ںآپ پیداہہوے اور ا لکو مات ید ماما بی تگجگ کہاجا تا ہے۔ یقن کے ملوں میس سے یکلہ ہے یا گا ول مٹش سے ای کگا وی ہے بھی رق کی جانب نو بکیا

۲۰۵

جا تا جآ کہا جانا سے تناما مملم الہدی انور بن مود مات یی سرقنرگی۔ مات یگودد رلیقوں سے پڑھاجا جا ہے مات ید یما یہت۔

والباتریدی ذسبة ا ی ماتریں‌بضم التاءاوفتحھا ویقال‌لھاماتریت قرب قربس مر یں (امام ااوڈنصور مات یدگی)۔ادد مات یی نسبت سے مات یدک طرف اورا ںکوتا کی ٹیش( ماخ بد )اود ماخ ید پڑھاجا جاہے۔اوراس کے لن ےکہاجا ا ےکہ

مات یت کمرقنزکمےجر یب ایکگاوں ے۔

ابیسعیدکبرالکریم کھت ژں مضیت الیهاغیر مرۃخ رج میہاجماعةمن العلہاء والفضلاء (الاناب !ش۱۵ )کیل مات بلدکی طر فکقی دف گیا خھاءاس میں علاءوفضلاء گی ایک ڑا جماعت ہوئی ہے۔ان مل ےابو نصر الفتح بن ابی حفص ماتریدی, لیکش ین بین حسان ما تر یی اورقاضی امام ایوس نپ (ارمت انڈیہم

ای سارک بدانک ریم لیت ہیں ہل النسبةا ی حلهەمن حائط الس رقندیقال لھا ماتریت ویقال بالدال ایضاماتریں‌مضیت الیہاغیر مرۃخ رج‌منہا جماعةمن العلہاءوالفضلاء مۂہم ابو الفتح ابن ابی حفص الماتریدی (ال نساب ٣‏ اص ۲)۔ مات ہدک یک نر کے ایک عح کی طرفسبت ہےشی کو مات بی تکہاجاتا ہے اورائ ںکودالی کے ساتھ مات بای پبڑ ھاجا ا ہے بی و سی عبدالک ری )اہ سکی طرف کیم رت رگ راہہوں_ مات دیس علماءوفضلا کی ایک جماععت پوید ہوک سے اوران شیل سے وص این بن ایل مات کی ہیں ۔اور یہاں بی امام الیٹنصور مات دی پیداہوے اورای وجرے ا میگ کش وری حاصل ہوکی۔ اور مات یٹیل اورنھی بڑے بڑمےعلاءونضلاء پیا ہہوۓ ہیں ۔ اور برق نک عحلہراورگا ول تھا اور ہ چھپور راو زبستالن میں ہے بینلہاورگا ول اس ز مانے ٹیل تھا۔ اتد یہ بڑ ےش میں تبد یل وکیا ء ہوگا۔ دای عالم۔

22

اور رقن ریس لا رفا ءاورمشا کاٹ تعدادییش ہوے ہیں ۔امام الومنصور ما تر یریرقت ری ےم لن کے اتا کرای رینں۔

(١)امامابو‏ القاسم حکیماسحاق السمرقندی

(٣)امام‏ ابو اللیث نصر بن محمدبن ابراھیم سمر قندی( ۶و لی ۵ے ۳ھ )بہت بڑےمفس محر فقرداعفا ہدۓ ہیں۔آپ نےتقر یپاک سکتای گی ہیں ۔ایکتخیر می جب الوم کے نام سے شجور ہے گیار ہکتب فقیی تین زحدورۃان میں ء کنب اصول وین میس ہیں۔آ پک ایر الوم فا دی نو ازل ہت الفافیین بخمز ان الفقہ اور بتان العارشن بڑییشہوراورشحرو فکتا ہیں ہیں ۔ اورپ ابواللیت اھر نل دکی کے نام سے بہتٹشبورہیں۔

(٣)اماماسحاق‏ سمرقندی

(۳) امام ابو محمدعبداللهبن عبدالرحمن بن الفضل سمرقندی

(۵)امامابو نصر محمد بن عثمان سمرقندی

(٦)اماممحمدبن‏ عبدالجلیل السمرقندی

(ے) امام علامەعبدالرحمان دارمی سمرقندی صاحپ مسنددارمی رم الٹر- علما مرقنرکا تک روالقندفی ذ کر علماءسمرقندٹل ے_

امام ااومنصور مات بدکی رح الڈدتھا ‏ یکی پیدرائشل

لم ار یءامام این مرک اضر من ال ومن ورشمہ نھب نگسود منج ااومنصور مات دی حر دک انصاری ( رح اللہ )تی .تار پید اکچ طور پر معلوم نیس ہوک ین نےکیھا ےک امام ااونصور ما تیر یلت مآ ۸ھاوش پیداہوے ےا مل ےکآ نے اپنے تن یی ن گیا ہئی نی دح ) ےلم حا لکیا اون یی نگ کی وفات کے وقت

۲٤ے‎

امام اٹنصور ماتر بد یک یع رق بیس بیس ہ گی ۔اورامام امنور ماتر بر یکی وفات م٣س‏ یش ہو تو اس دق تآ پک یگ ۵ے بی ہ گی ۔او راگ بیشابت ہوجان ےک ہآ پ نے امام بن مقائل رازی (متونی ۲٢۸‏ مد )ےھ یلم وص لکیاتھاتو تن بن اتگل راز یی وفات کے وق تآ ‏ پکی عم رد بیس ہوگی ۔اگرامام الیمنصود مات بد کی ولا دت ۸سش ہو۔اںصورت می لآ پک یعھ ر۹۵ برس ہوگی۔ ایک قیاس واندازہ ہے۔ ہف طور پتار پیدائیش معلودئیں ہے اس ل ےک ہتمام صاحبان طنقات اشفیہ اورسوا پگ رتارقولادت کے باروییل خا مو ہیں۔

ڈاک راغلی کت ٹیں ولا یل کر اح من المؤرخین تا رن مولںەوان کان دکتور ایوب علی یرگ انەولںحوا ی عام ۲۳۸ لان ‌احد‌اساتذة الباتریدی هو مد بن مقاتل الرازی الذی توئی عام ۲۳۸ءفان مم ذلك یکون الباتریدی قں‌ع اش ما یقرب من المائةعام لان الہؤرخین متفقون على ان توئٹی عام ٣٣اھ‏ و۳ ۹۴ء( تر تاب ال ۃیرگل٢)‏

تر جمہ:اورم رین بی سے کی نے بھی پک تار نوا دتکا نکی کیا اگ چرڈاکٹر الوب صاحب7 نیدینے ‏ ےکآ پأقر بب ٣مھ‏ ۵ دو ءشس پبدا ہو اس لےکہ امام ابڈنحصور مات بودرکی کےاسا تذہ میس ایک استاذ من مفائل راز ۸٢د‏ اللاءش وت ہوۓ ہیں تو اگ بہانداز ددرست یآ بچھرامام الو نصور مات دیقم پا سوسال زندہ رہے ہیں۔اس مل ےکم نی نکا اس جات پراناقی ےکآ پ ساس اح ۴ ۹۲ میس فوت بد کین علا ‏ فطائ شلکرکی ڈزد ےا ان ابدا سکیا نفد کو نکیا دہ نکتکیں 2۶17 نت ے٤‏ او زی کن ےر

فاضلم محققہفاطمۃیوسف الخحیمی لع ہی ںک ہب مکہہ سک ہیں امام اٹنصور ات یدی

۲۸

(رح اش )آت ا۲۳۳۸ھ یش پییداہوئے تےاورامام ا سن اش کی سےٹیں سا لق تو انس ساب فیا سوسا لی رہوگ یکیوکہاس انداز کے مطابقی پیدائش ۲۳۸ج اور وفات ۳“ برے۔

لعل‌ھذا یمکننا القول ‌ان‌ابامنصور الماتریںی قں‌ع اش قرابةمئة عام اذ ولں علی ما قدرناسنة۸ ۲۳ء تقرببا وتوئی سنۃة ۳۰۳۳ء ودفن ٹی سمرقیں۔ تا رکا تراثا ثرا یہتدی بەاقرانەوتلاملدوالاجیالمن‌بعںة

ا ی الطریق القویم لفھم القران‌العظیم والسنة الشر یفةوعقیںة اھل ال سن( متادیلات اگ النی۸۷)-

نام ونسب وکنیت والقا ہو لک یکشزت

امامالمتکلمین عمدةالمفسرین امام الائمہ ال حم ورشھ مین جب نئمود ما تر یرک حرقتدی فی (رحص اود کے سلسلع نب کے ھوانے ےن مو ری نکھت ہی ںک یآ پکاساسل نب کئی واسطوںل سے حظرت الو الوب خمالد جن ز یرہ نکلاب الا رگی شی ارعش ےل جاتا سے۔و و تر ت الد الوب انصاریی رشی اشعنشن کےگھمر میس رسول ال دصلأ ایم سترہ ما دک قیام پیر ہے تے۔ بیہاں اس سلسلرٹس چندھوانے بدییقا رین کے جاتے ہیں :

(۱)ڈاکٹ ا شخلی تح ریفرماتے ہیں لا نعرف شیئا عن والںیەولاعن احد من اسر تەوان کان الہ رخون یل کرون ان نسبەیرجع ا ی ای ایوب خالں بن ‌زیں‌بن کلیب الانصاری وھو الذی نزل عليە رسول اللہ آحیں فا لئی ما ولزلك ال امام البیا کیل گر الافضاری فراحعا عیں ذ کر ا“مالامام الباتریدی حیثیقول الامام ابومنصور مہں‌بن

۲9

محمودالہاتریدی النصاری (مقد تاب ات حص۲)۔ ت جمہ ب مآپ کے الین اور پ کے ناندان ک ےکی فردکے بارے میس انیٹ جا کر چرم ران ا نکانسب با نکرتے ہی ںک دو تحخرت الو الب خالد بن ز یرب نعلیب انصاریکک جاچا ےہ دوا و ایب یکن کے پائس بی یلم انس وقت ات ے2( ممان بن )حے ج بآپ نے یع نر کی طرف اجرت ٹر ایھی۔اورای لئ ہم علامراتھ بیاش یکو پاتے ہی ںکدوامام ال منصور مات بر یکا نام ذکرکرتے ہو راتا آپ کے الصارکی ہو ن ےکا ذک کرت ہیں۔ ام کال الد یی ام بیاشیپئی (مونی ۱۰۹ھ ) کھت ہیں الا مام یصو رھب نین موداما تر بارکی الا مارک (اشارت الھرامگش ٢٢)۔‏ تر جمہ: امام ااومنورشھہ بن رک نمور مات یدگ انار (رجم اللہ ) تھالی یخس ن ےپ کےسلسای نب میں مود کے بحدیج نا ھی کیا ے_

٣۴علامہسیدمنشی‏ ز بیدری (رحم ا ) کھت یں ووجد تق بعض المجامیع بزیادۃ حیں‌بعں محمودوبالانصاری ٹثی نذسبەفا نگ ذلك فلاریب فيه فانەناصر السنةقامع البں‌عةومی الشریعة کماان کنیتەتدل علق ذلژت ایضأ (امادالمادواتعحین ۱6ص٥)۔‏

اورییس نےپنن س مھا می مود کے بحدرلفٹ مکی ز یادثی پاکی ہے( کیشھمم ن شھ ہن ودب نر اورپ کےنسب میں انصارکینسبت تو اگ رج ےو اس می لکوئی شیک می کیپ نت گی مددکرنے وانےء برع تکومٹانے وا نل ےش ابع تکوزن ور نے وا لے تھے لی اک ہآ پک کنیت الیننمورکھی اس پرولال تک لی ے۔-

۳٣ھو‏ ابومنصور میں بن حہںبن حمودالہاتریدی السہرقندی الانصاریالنی ولد حوا ی سنة ۲۳۵ دو توثی اھ (مقدمتادیلاتائل

۲۳٣٣۰

الما

ترجہ :ودامام الو نصورشج من ھب نتمود مات بر یکم رقنری انصاری جنر بسن ےسا ویش پبیراہوۓ اور ٣سا‏ م۲ ں فقوت ہووۓ _

۵قیل ان نسب الہاتریدی یرجع ا ی ابی ایوب خالں بن کلیب الانصاری وهلذاالنسبة شریف لەودلیل علو قدر اسر تە وش رف لسبه اذا اءہا تدتھی ا ی ابی